Khandan

خاندان..سلطان العاشقین سلطان محمد نجیب الرحمن

خاندان..سلطان العاشقین سلطان محمد نجیب الرحمن

خاندان

سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کا مبارک نکاح 13 مارچ 1987ء (13 رجب 1407 ھ) قبل نماز جمعتہ المبارک لاہور میں محترمہ طاہرہ پروین بنت محمد سلیم سے ہوا۔ رخصتی 18 نومبر 1987ء (28 ربیع الاول 1408 ھ) بروز جمعرات پانچ بجے شام ہوئی۔ آپ مدظلہ الاقدس کا نکاح اور رخصتی نہایت سادگی سے ہوئی۔ نکاح کے وقت دونوں خاندانوں کے 15 افراد اور بوقت رخصتی صرف چھ افراد نے شرکت کی۔ آپ مدظلہ الاقدس کے نکاح اور رخصتی کے وقت غیر شرعی رسومات اور اسراف سے مکمل اجتناب کیا گیا۔ حالانکہ آپ نے ابھی راہِ فقر پر ظاہری طور پر قدم بھی نہ رکھا تھا لیکن طبیعت میں سادگی اور غیر شرعی رسومات کی ناپسندیدگی کی وجہ سے نکاح انتہائی سادگی سے فرمایا۔
سلطا ن العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کی زوجہ محترمہ طاہرہ پروین بنت ِ چوہدری محمد سلیم ولد چوہدری نور دین 18 نومبر 1969ء (8 رمضان المبارک 1389ھ) بروز منگل بوقت ِ افطار اور نمازِ مغرب اوکاڑہ میں پیدا ہوئیں۔ ان کے والدلاہور(پاکستان) میں ملازمت کرتے تھے۔ اس لیے ولادت کے فوراً بعد والدین لاہور لے آئے۔ لاہور ہی سے انہوں نے میٹرک کا امتحان پاس کیا۔ محترمہ طاہرہ پروین نے زندگی کے ہر موڑ پر خصوصاً راہِ فقر میں سلطان العا شقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کا نہایت صدق اور خلوص سے ساتھ دیا۔ جب بہت سے قریبی رشتہ دار اس راہ پر چلنے کی وجہ سے آپ مدظلہ الاقدس کا ساتھ چھوڑ گئے تو آپ ہمیشہ ان کے لیے تقویت کا باعث بن کر ساتھ کھڑی رہیں۔ خود بھی سلطان الفقرششم حضرت سخی سلطان محمد اصغر علی رحمتہ اللہ علیہ کے دستِ مبارک پر دسمبر 1998ء میں بیعت ہوئیں۔ جب بھی سلطان الفقر ششم رحمتہ اللہ علیہ لاہور میں آپ کے گھر میں قیام پذیر ہوتے تو ان کی خدمت میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھتیں۔ باوضو ہو کر صدق اور خلوص سے اُن کا طعام تیار فرماتیں۔ سلطان الفقر ششم رحمتہ اللہ علیہ بھی اُن سے بہت شفقت اور محبت فرماتے تھے اور ان کے ہاتھ کے بنے ہوئے کھانوں کی بہت تعریف فرمایا کرتے تھے۔ سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس نے اپنا جو مال اللہ کی راہ میں قربان کیا اس میں آپ کا مال بھی شامل ہے۔ حتیٰ کہ آپ نے اپنا والا گھر بھی راہِ فقر کے نام کر دیا جس میں اب سلسلہ سروری قادری کی خانقاہ تحریک دعوتِ فقر کا مرکزی دفتر اور اس کے شعبہ جات کے دفاتر ہیں۔ اللہ تعالیٰ نے محترمہ طاہرہ پروین صاحبہ کو بھی ان کے عشق ِ حقیقی اور فقر کے لیے خدمات اور جد و جہد کی بنا پر اعلیٰ ترین روحانی درجات سے نوازا ہے۔29۔اکتوبر 2017ء (8۔صفر1439ھ) بروز اتوار سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کے دست ِ مبارک پر تجدیدِ بیعت کی۔ آپ بھی فقر کی نعمت کو خواتین میں عام کرنے کے لیے سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مد ظلہ الاقدس کے شانہ بشانہ مصروف ہیں۔ آپ ہر اتوار خواتین طالبانِ مولیٰ سے اپنی رہائش گاہ پر ملاقات فرماتی ہیں ، ان کے ظاہری ‘باطنی اور روحانی مسائل کے حل کے لیے اُن کی راہنمائی اور دعا فرماتی ہیں۔
اللہ تعالیٰ نے ان کے بطن سے سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کو چار صاحبزادیاں اور ایک صاحبزادہ عطا کیا۔ ایک صاحبزادی تابینہ نجیب کا سات سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔ 

اولاد

1 .  صاحبزادی منیزہ نجیب 7 اگست 1988 (23 ذوالحجہ 1408 ھ) بروز اتوار بوقت مغرب تقریباً سات بج کر پانچ منٹ پر لاہور میں پیدا ہوئیں۔ دس سال کی عمر میں سلطان الفقر ششم حضرت سخی سلطان محمد اصغر علی رحمتہ اللہ علیہ کے دست مبارک پر بیعت ہوئیں۔ کم عمری میں کی گئی اس بیعت کی تجدید کے لیے2012ء میں اپنے والد مرشد سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کے دست ِ مبارک پر تجدید ِ بیعت کی۔14نومبر2015ء بروز ہفتہ صاحبزادی منیزہ نجیب کی کیپٹن محمد عبد اللہ اقبال سروری قادری سے شادی ہوئی۔

2  .  صاحبزادی تابینہ نجیب 27 ستمبر 1989 (25 صفر 1410ھ) بروز بدھ شام چھ بج کر پندرہ منٹ پر لاہور میں پیدا ہوئیں اور سات سال کی عمر میں 2 ۔اکتوبر 1996ء (18 جمادی الاول 1417ھ) بروز بدھ صبح آٹھ بج کر پانچ منٹ پر جنرل ہسپتال لاہور کے انتہائی نگہداشت کے ( ICU) وارڈ میں انتقال فرما گئیں۔ اپنی دادی کے پہلو میں کریم بلاک اقبال ٹاؤن لاہور کے قبرستان میں مدفون ہیں۔

3 .  صاحبزادی مشعل نجیب 6 ستمبر 1994 ء (28 ربیع الاول 1415ھ) بروز منگل صبح 2 بج کر بیس منٹ پر لاہور میں پیدا ہوئیں۔ اپنے والد محترم سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کے دست ِ مبارک پر بیعت ہیں۔ مورخہ17دسمبر2016بروز ہفتہ ڈاکٹر حسنین محبوب سروری قادری سے نکاح ہوا اور12فروری2017ء کورخصتی ہوئی۔

4 .  صاحبزادہ محمد مرتضیٰ نجیب 5 اگست 1997ء (30 ربیع الاول 1418ھ) بروز منگل شام 5 بج کر بیس منٹ پر لاہور میں پیدا ہوئے۔ سلطان الفقرششم حضرت سخی سلطان محمد اصغر علی رحمتہ اللہ علیہ کو ان سے خاص محبت تھی۔ آپ رحمتہ اللہ علیہ جب بھی انہیں دیکھتے تو فرماتے انشاء اللہ اسم بامسمّٰی ہوگا۔سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس نے عرس سلطان التارکین حضرت سخی سلطان سیّد محمد عبد اللہ شاہ مدنی جیلانی رحمتہ اللہ علیہ کے مبارک موقع پر22۔اکتوبر2016ء کو دربار پاک پر دست ِ بیعت فرمایا اور اپنی دستار مبارک عطا کی اور12۔اپریل ربیع الاوّل 1440ھ (21۔نومبر 2018) کو محفلِ میلادِ مصطفیٰ  صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم پر خلافت عطا فرمائی اور تحریک دعوتِ فقر کا نائب سرپرست مقرر فرمایا۔

5 .  صاحبزادی فاطمہ نجیب 4 جنوری 2003ء (30 شوال 1423ھ) بروز ہفتہ شام چار بج کر تیس منٹ پر لاہور میں پیدا ہوئیں۔آپ سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کی وہ صاحبزادی ہیں جو آپ مدظلہ الاقدس کی راہِ فقر کی تکمیل اور امانت ِالٰہیہ کی منتقلی کے بعد آپ کے مرشد کے سالِ وصال پیدا ہوئیں۔ سلطان الفقر ششم رحمتہ اللہ علیہ نے خود ان کا نام فاطمہ رکھا اور ولادت کی خبر سنتے ہی اپنی دوسری زوجہ محترمہ کے ہمراہ لاہور تشریف لاکر پیار سے گود میں لیا اور اپنے دہن مبارک میں شہد ڈال کر اس نومولود بچی کے منہ میں ڈالا اور فرمایا کہ ہم تو لاہور صرف عالم ِ لاھُوت سے آنے والی اس نئی روح سے ملاقات کے لیے آئے ہیں اور جلد سے جلد عقیقہ کرنے کا حکم فرمایا۔ زیر ِ تعلیم ہیں۔اپنے والد ِ محترم سلطان العاشقین حضرت سخی سلطان محمد نجیب الرحمن مدظلہ الاقدس کے دست ِ مبارک پر بیعت ہیں۔